کارپوریٹ وِسل بلوئنگ پالیسی

کارپوریٹ وہسل بلوئنگ پالیسی کا مقصدالائیڈ بینک لمیٹڈ کی پالیسیوں یا الائیڈ بینک لمیٹڈ کی ساکھ یا کاروبار یا عوام الناس پر مضر اثرات ڈالنے والی مشکوک یا نامناسب سرگرمیوں سے متعلق مجاز اتھارٹی کو اپنے تحفظات سے آگاہ کرنے کے لئے وہسل بلوئرز کو پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے۔ وہسل بلوئرزملازمت کے نقصان، امتیازی سلوک، ہراسگی وغیرہ جیسی انتقامی کارروائی کے خوف کے بغیر ان معاملات کی رپورٹ کرنے کے قابل ہونے چاہئیں۔ وہسل بلوئنگ ایک روائتی اور مؤثر انتظامی تکنیک ہے جو ملازمین، صارفین اور دیگر فریقین کی جانب سے ادارے کے ساتھ ممکنہ دھوکہ اور بد عنوانانی کے تدارک/نشاندہی کے لئے استعمال ہوتی ہے۔ یہ ملازمین کو بد نیتی پر مبنی سرگرمیوں سے متعلق بغیر کسی خوف اور دباؤ کے اپنے شک کے بارے میں انتظامیہ کوآگاہ کرنے کی تلقین کرتی ہے۔

1.تعارف


  • 1.1 مقصد

    • اس پالیسی کا مقصد الائیڈ بینک لمیٹڈ (بینک) میں ایسا ماحول برقرار رکھنا ہے جو عملہ کو بغیر کسی مزاحمت، مابعد امتیازی سلوک اور کسی بھی صورت میں نقصان کے خوف سے ہٹ کر فریبی، غیر انسانی و غیر اخلاقی یا بد عنوانی پر مبنی سرگرمی یا فعل،جو اُن کی رائے میں بنک کو مالی یا ساکھ کو نقصان پہنچا سکتا ہو، کا انکشاف اور رپورٹ کرنے کا حوصلہ فراہم کرتی ہے۔
    • بینک کی کارپوریٹ وہسل بلوئنگ پالیسی انکشاف کرنے والوں کو اُن کے جائز ذاتی مفادات کی راز داری اور تحفظ کو یقینی بناتی ہے۔یہ مشکوک سرگرمیوں کاانکشاف کرنے والوں کومراعات بھی دیتی ہے۔
    • بینک کی پالیسی اپنے ایماندار، مخلص اور وفادار ملازمین کی مدد اور حوصلہ افزائی کرتی ہے تاکہ وہ دھوکہ دہی، غیر انسانی اور غیر اخلاقی یا بد عنوانی پر مبنی سرگرمیوں کو رپورٹ یا ظاہر کر سکیں اور ایسی رپورٹس پر تفتیش عمل میں لائی جا سکے۔ کارپوریٹ وہسل بلوئنگ پالیسی یقین دہانی کراتی ہے کہ اس پالیسی کے تحت تمام رپورٹس کلی طور پر خفیہ رکھی جائیں گی اوربینک انکشاف کرنے والوں کے خلاف مداخلت، انتقام، مزاحمت اوردھمکیوں جیسے مبینہ افعال کو مد نظر رکھ کر ان رپورٹس پر
      کارروائی کرنے کے لئے پر عزم ہے۔
    • بینک کا داخلی نظم و ضبط اور آپریٹنگ طریقہ ہائے کار ایسی سرگرمیوں کو اخذ کرنے، روکنے یا حوصلہ شکنی کرنے کے لئے مرتب کئے گئے ہیں تاہم نظم و ضبط کا یہ بہترین نظام ان بے قاعدگیوں کا مکمل دفاع نہیں کرسکتا۔اس لئے تمام ملازمین کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے کہ وہ کسی ایسی سرگرمی یا عمل /بد عملی کی اطلاع دیں جس سے بینک کو مالی یا ساکھ کو نقصان ہوسکتا ہے۔


  • 1.2 تصریحات

    •  انکشا ف کرنا: وہسل بلوئنگ مجاز اتھارٹی کو کسی فرد واحد یا ادارے کی مبینہ فریب، غیر انسانی و غیر اخلاقی یا بد عنوانی پر مبنی سرگرمیوں یا امتیازی سلوک یا کسی قانون و ضوابط، پالیسی،ضابطہئ اخلاق کی خلاف ورزی جیسے دیگر بد ترین افعال
      اور خصوصاً ایسے معاملات جو بطور با اعتماد مالیاتی خدمات فراہم کنندہ بینک کی ساکھ اور اعتماد کو داؤ پر لگا دیں کا ذریعہ ہے۔
    • کارپوریٹ وہسل بلوئنگ پالیسی: ملازمت سے ہاتھ دھونے، امتیازی سلوک، انتقامی کارروائی، ہراسگی وغیرہ جیسی انتقامی کارروائی کے خوف کو بالائے طاق رکھ کر دھوکہ دہی، غیر انسانی و غیر اخلاقی یا بد عنوانی پر مبنی سرگرمیوں سے متعلق
      مجاز اتھارٹی کو اپنے تحفظات سے آگا ہ کرنے کے لئے انکشاف کرنے والوں کی حوصلہ افزائی کرتی ہے۔ یہ سرگرمیاں بینک کی پالیسی کے خلاف ہو سکتی ہیں یا بینک کی ساکھ یا کاروبار یا معاشرے پر برے اثرات مرتب کر سکتی ہیں۔
    • انکشاف کرنے والا: وہسل بلوئرانکشاف کرنے والاایک ایسا شخص یا ادارہ ہے جو مقررہ طریقے کی پیروی رتے ہوئے قابل بھروسہ اتھارٹی کو انکشاف کرتا ہے۔ یہ وہسل بلوئر/انکشاف کرنے والا بینک کا حالیہ یا سابقہ ملازم، شیئر ہولڈر،
      وینڈر، کنٹریکٹر، خدمات فراہم کنندہ، صارف یا عام عوام ہو سکتا ہے۔ وہسل بلوئر رپورٹنگ کی حد تک شکایت میں کردارادا کرے گا جسے تفتیشی کی حیثیت سے زیر غور نہیں لایا جائے گا اور حالات و واقعات کی روشنی میں کسی بھی قسم کے انسدادی
      یا اصلاحی عمل کا تعین نہیں کرے گا۔
    • وہسل بلوئنگ یونٹ: وہسل بلوئنگ پالیسی کے تحت انکشاف کرنے والے کے الزامات، شکایات اورتحفظات پرکارروائی کے لئے ACOB کی نگرانی میں فعالی طور پر ایک آزاد یونٹ قائم کیا گیا ہے۔
    • تفتیشی: چیئر مین ACOB چیف ARR یا بینک کے دیگر مجاز ایگزیکٹو کوو ہسل بلوئنگ شکایات سونپے گا یا کسی تفتیشی کے حوالے کرے گا۔ چیف ARR بینک کے تفتیشی طریقہ کار کے مطابق تفتیش مکمل کرے گا۔ اگر شکایت چیف ARR
      کے خلاف ہوتو تفتیش کے لئے چیئر مین ACOBکا مقرر کردہ شخص ARR سے باہر کسی بھی شخص کو تفتیش سونپ سکتا ہے یاکسی بیرونی ایجنسی کے حوالے کر سکتا ہے۔
    • نیک نیتی: ذاتی مفادات یا ذاتی عناد اور دشمنی کو بالائے طاق رکھتے ہوئے بینک کے مفاد میں رپورٹ کرتے وقت نیک نیتی کا مظاہر ہ نظر آتا ہے اور وہسل بلوئر کو یقین ہو کہ رپورٹ کے اجزا بالکل درست ہیں۔ تاہم، یہ ضروری نہیں کہ نیک نیتی
      پر مبنی رپورٹ سچی ہو۔
    • بد عملی: بد عملی کی مثالوں میں شامل ہیں، لیکن یہ محدود نہیں، مالیاتی فریب، قانون وضوابط اور بینک پالیسیوں کی خلاف ورزی، غیر انسانی و غیر اخلاقی رویہ یا بد عنوانی پر مبنی سرگرمی، فرائض سے غفلت اور بینک کو دھمکیاں۔
    • جوابی کارروائی: جوابی کارروائی کا مطلب ہے پالیسی کے تحت انکشاف کرنے پر کسی بھی شخص کی جانب سے وہسل بلوئر کیخلاف براہ راست یا بالواسطہ امتیازی سلوک، انتقام یاہراساں کرنا۔
    • تحفظ: بینک کی جانب سے کئے گئے تمام اقدامات جو وہسل بلوئر کے نام کو خفیہ رکھنا یقینی بناتے ہیں اورجوابی کارروائی اورمالی نقصان سے وہسل بلوئر کو بچانے کے لئے کئے اقدامات بھی اس میں شامل ہیں۔


  • 1.3 نفاذ کی ذمہ داری

    بورڈ آڈٹ کمیٹی (ACOB) اس پالیسی کے نفاذ کی ذمہ دارہے۔


  • 1.4 اطلاق

    یہ پالیسی تمام بینک ملازمین اور بینک سے باہر فریقین یعنی شیئر ہولڈرز، وینڈرز، صارفین وغیرہ پر لاگو ہو گی۔


  • 1.5 دستیابی

    یہ پالیسی ABL شیئر پوائنٹ پورٹل اور ABL کی کارپوریٹ ویب سائٹ پر دستیاب ہو گی۔


  • 1.6 ڈھال

    اس پالیسی کی کامیابی کا انحصار جزوی طور پر احترام،وہسل بلوئر اورجواب دہندہ(جواب دہندگان) کے مشاہدہ اور پیشہورانہ اخلاقیات اور رازداری کے درجہ پر ہے۔ تاہم ساتھی عملہ کی جوابی کارروائی یا انتظامیہ کی جانب سے ہراساں کرنا یا
    انتقامی کارروائی وہسل بلوئنگ کے سب سے بڑے نقصانات ہیں۔ لہٰذاوہسل بلوئنگ کے نتیجے میں انکشاف کرنے والےکو جذباتی، نفسیاتی اور/یا جسمانی ضرر سے بچانے کے لئے بینک وہسل بلوئرز کے تحفظ کے لئے پر عزم ہے۔


  • 1.7 رازداری

    تمام معاملات پر رازداری کا رویہ رکھا جائے گا اور انکشاف کرنے والے کی شناخت نامساعد حالات کے علاوہ افشا نہیں کی جائے گی ماسوائے جہاں وہسل بلوئر کی شناخت ظاہر کرنا لازمی ہو (مثلاً، عدالت میں طلب کرنے پر اُس کا بیان
    /شہادت)یا شکایت کی رپورٹ طلب کرنے والے افراد جنہیں اس شکایت پرباقاعدہ تحقیق شروع کرنے کی غرض سے انکشاف کرنے والے کانام جاننا ضروری ہو۔


  • 1.8 نظر ثانی

    چیف ARR اس دستاویز کی ہمہ وقت ترمیم کرنے کا ذمہ دار ہوگا۔ لہٰذا، یہ پالیسی چیف ARR کی جانب سے وقفہ وار (تین سالوں میں کم از کم ایک مرتبہ)باقاعدہ نظر ثانی سے مشروط ہے۔اور کسی بھی قسم کی تبدیلی/اضافہ/ترمیم پر غور کے لئے
    تمام پیشکشیں ACOBاور منظوری کے لئے مزید تجاویزبورڈ آف ڈائریکٹرز کو جمع کرائی جائیں گے۔


  • 1.9 وہسل بلوئنگ یونٹ کی خود مختاری

    1. وہسل بلوئنگ یونٹ ACOB کے زیر انتظام تشکیل دیا گیا ہے۔


2. مقصد اور دائرہ کار


  • 2.1 مقاصد

    اس پالیسی کے مطلوب مقاصد حسب ذیل ہیں:

    • شفافیت، جواب دہی اور دیانت داری کے کلچر کو پروان چڑھانا۔
    • انکشاف کرنے کے لئے بینک کے ایماندار، وفادار، مخلص ملازمین کے لئے ایسا ماحول پیدا کرنا جہاں اُنہیں کسی بھی قسم کی غیر
    • انسانی و غیر اخلاقی سرگرمی، حالیہ یا سابقہ ملازمین، وینڈرز، کنٹریکٹرز، خدمات فراہم کنندگان اور صارفین کی جانب سےبینک کی مالیات یا ساکھ کو نقصان پہنچانے والے دھوکہ دہی پر مبنی فعل کا شک ہو یا جانتے ہوں۔
    • وہسل بلوئنگ عمل سے متعلق ملازمین اور سٹیک ہولڈرز میں آگاہی پیدا کرنا۔
    • دھوکہ دہی، غیر اخلاقی، غیر انسانی یا بد دیانتی پر مبنی سرگرمی یا بد عملی کو ابتدائی مرحلہ میں ہی انتظامیہ کی نظر میں لانا اورمناسب کاروائیوں کرنا ہے


  • 2.2 دائرہ کار

    1. بغیر کسی حد کے اس پالیسی کے دائرہ کار میں شامل ہے:
      • ناجائز اعمال یا احکام جو قانون کی خلاف ورزی، نقصان، بد انتظامی، بینک کے وسائل اور اختیار کا بے جا استعمال سےپیدا ہوں۔
      • دھوکہ-انتظامیہ، گورننس کے ذمہ دار افراد، ملازمین یا فریق ثالث میں سے کسی بھی فرد کی جانب سے دانستہ فعل جس سےدھوکہ دہی کا عنصر واضح ہو اور اس سے اُسے نامناسب یا ناجائز فائدہ حاصل ہو۔
        بد عنوانی- ٹھوس حالت میں کسی بھی چیز کی براہ راست یا بالواسطہ پیش کش، وصولی یا فراہمی یا کسی دوسرے شخص /ملازم کےکاموں کو نامناسب انداز میں متاثر کر کے ناجائز فوائد فراہم کرنا۔
        بدعملی-بینک کے عہدیدار کی جانب سے بینک کی پالیسیوں، ذاتی و پیشہ ورانہ معیارات کے اصول وضوابط کی خلاف ورزیکرنا بشمول فنڈز کا خرد برد یا متوازی بینکنگ سرگرمیوں میں شامل ہونا۔
      • ملی بھگت: ناجائز مقاصد حاصل کرنے کے لئے دو یا زائد افراد/ملازمین کا گٹھ جوڑجس میں دوسرے شخص /ملازم کے کاموں کو نامناسب انداز میں متاثر کرنا بھی شامل ہے؛ اور
      • بینک کے امور، ساکھ اور مشن کو متاثر کرنے والی دیگر سرگرمیاں
    2. بینک کی پالیسی اور مسئلہ سے متعلق طریقہ ہائے کارکے مطابق کارروائی کے لئے ہیومن ریسورس اور انتظامی مسائل سےمتعلقہ شکایات بینک کے CEO کو ارسال کی جائیں گی۔
    3.  یہ پالیسی بینک کے مالیاتی و کاروباری فیصلوں پر استفسار کے لئے تیار نہیں کی گئی ہے اور نہ ہی یہ بینک کے دیگر طریقہ ہائےکار، اصول و ضوابط کے دائرہ کار میں آنے والے دیگر مسائل کو زیر غور لانے کے لئے استعمال ہو سکے گی۔


3. وہسل بلوئرز/انکشاف کرنے والوں کا تحفظ

  • دی گئی معلومات اور انکشاف کرنے والے کی شناخت پالیسی کی ذیلی شق 1.7 کے تحت خفیہ رکھی جائے گی۔
  • وہسل بلوئنگ کے لئے بینک انکشاف کرنے والوں کے تحفظ کے لئے پر عزم ہے۔ وہسل بلوئر کو ہراساں کرنے اورانتقامی کارروائی کرنے کی حوصلہ شکنی کی جائے گی۔اگر انکشاف کرنے والا شخص محسوس کرتا ہے کہ اپنی جائے ملازمت پرانکشاف کرنے کے بعد اُس پرمبینہ افسران انتقامیکارروائی یا ہراساں کرتے ہیں تو انتظامیہ اُس کی درخواست پر اُسے دوسرے موزوں مقام پر تبادلہ کرنے پر غور کر سکتے ہیں ۔ تاہم، یہ ضمانت اُن معاملات پر لاگو نہیں ہوتی جہاں یہ ثابت ہو جائے کہ اُس نے اپنی ذاتی عناد یا دشمنی کا بدلہ لینے کے لئے ان معاملات کو اٹھا یا ہے یا وہسل بلوئر معمولی مسائل پر شکایت کرنے کا عادی ہے۔
  • انکشاف کرنے والے شخص کا تحفظ بینک کی صلاحیت تک محدود ہے لیکن اس پالیسی کے تحت انکشاف کرنے پر وہسل بلوئرکے خلاف کسی بھی قسم کی جوابی کارروائی کو بد عملی سمجھا جائے گا جو تادیبی کارروائی کے قابل ہے۔
  •  جس سرگرمی پر انکشاف کیا گیا ہے اُس کے خلاف انکشاف کرنے والے ملازم کو تادیبی کارروائی سے مسئلہ کی روح کےمطابق بچایا جائے گا۔

4. ذمہ داریاں


  • 4.1 بینک کی ذمہ داریاں

    • بینک کے اپنے تمام ملازمین کے علم میں لانے کے لئے کارپوریٹ وہسل بلوئنگ پالیسی تقسیم کرے گا۔
    • بینک وہسل بلوئنگ شکایات کو ترسیل کے لئے مندرجہ ذیل ذرائع استعمال کرے گا:
      • وہسل بلوئنگ کے لئے مقرر کردہ ای میل ایڈریس [email protected] تک چیئرمین ACOB کی رسائی ہوگی۔
      • بینک کی کارپوریٹ ویب سائٹ پر وہسل بلوئنگ فارم دستیا ب ہے۔
      • چیئر مین ACOB کے نام ڈاک/کوریئر کا پتہ الائیڈ بینک لمیٹڈ، مرکزی دفتر 3-4 ٹیپو بلاک، نیو گارڈن ٹاؤن لاہور ہے۔
    • اگر انکشاف کرنے والاپالیسی کے مطابق بذریعہ ڈاک معلومات ارسال کرتا ہے تو بینک یقینی بنائے گاکہ بغیر چھیڑ چھاڑ کئےتمام شکایات چیئرمین ACOB کو براہ راست وصول کرائی جائیں۔
    • بینک پالیسی کے تحت وہسل بلوئنگ عمل کے مؤثر تعین کے لئے طریقہ کارمرتب کرے گا۔ اس طریقہ کار کے تحت وہسل بلوئنگ انتظامات کے ذریعے اٹھائے گئے معاملات سے متعلق MIS اور ان معاملات پر انتظامی رد عمل ACOB کو
      وقفہ وار رپورٹ کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ وہسل بلو شکایات کو وصول، ہینڈل اور نگرانی کرنے والے عہدے داروں کے ناممرحلہ وار نظر ثانی کے لئے ACOB کو پیش کئے جائیں گے۔
    • بینک یقینی بنائے گا کہ کارپوریٹ وہسل بلوئنگ پالیسی کا باقاعدگی سے منصفانہ انداز میں اطلاق ہوتا ہے اور بینک خلاف ورزی یعنی غیر اخلاقی، بد دیانتی یا فریب پر مبنی سرگرمیوں کے لئے صفر برداشت کی پالیسی پر عمل پیرا ہو۔
    • بینک یقینی بنائے گا کہ غیر اخلاقی، بد دیانتی یا فریب پر مبنی سرگرمیوں کی رپورٹنگ کرتے ہوئے انکشاف کرنے والا خوف سے آزاد ہو۔
    • تحفظ فراہم کرنے کے لئے پالیسی کے سیکشن 3 کے تحت وہسل بلوئرز اپنی شناخت ظاہر کریں گے اور بینک حسب ضرورت تفتیش کے نتائج سے بھی آگاہ کرے گا۔


  • 4.2 انکشاف کرنے والے کی ذمہ داری

    • دھوکہ، جعل سازی، اخلاقیات سے بالا تر، بد دیانتی یا فریب پر مبنی سرگرمیوں میں بینک کے عہدیداروں کے ملوث ہونے کی صورت میں علم رکھنے والے ملازمین انکشاف کرنے اور مجاز ہونے کی صورت میں مناسب کارروائی کرنے کے اخلاقی طور پرپابند ہیں۔
    • پالیسی کے تحت رپورٹ میں انکشاف کرنے والے شخص سے غیر جانبدار رہنے کی توقع کی جاتی ہے۔
    • انکشاف کرتے وقت وہسل بلوئر معلومات کی سچائی کو یقینی بنانے کے لئے انتہائی احتیاط سے کام لے گا۔ انکشاف کرنے والا شخص بار بار بدنیتی پر مبنی حقائق کے برخلاف جھوٹے یا ذاتی عناد یا دشمنی اور ایذا رسانی پر مبنی الزامات نہیں لگائے گا۔ایسی صورت میں وہسل بلوئر کے خلاف مناسب کارروائی عمل میں لائی جا سکتی ہے


5. انکشاف کرنے پر مراعات

  • ایمانداری بینک سے وفاداری اور بلا خوف و خطر آزادی سے بینک کے عملہ کو کام کرنے کی حوصلہ افزائی کرنا تاکہ بینک کو کسی بے ایمان اور بد دیانت شخص کی غیر اخلاقی یا بد نیتی یا فریب پر مبنی سرگرمیوں یا بد عملی سے بینک کو مالیاتی یا ساکھ کو نقصان پہنچنے سے بچانے پر انتظامیہ انعامات پیش کر سکتی ہے۔ ان انعامات کی اہلیت کے لئے انکشاف کرنے والا/والے سے رابطہ کی معلومات مطلوب ہوتی ہیں۔لگائے گئے الزامات درست ثابت ہونے کے باوجود بے نامی انکشاف کی صورت میں حالات و واقعات کو مد نظر رکھتے ہوئے کسی بھی شخص کو انعام نہیں دیا جائے گا۔
  • ACOBکی انتظامیہ کو دی گئی سفارشات پر انکشاف کرنے والا جب بینک کی ساکھ اور مالیات کو مبینہ طور پر پہنچنے والے نقصان یا قانونی کارروائی کا باعث بننے والی غیر اخلاقی، بد نیتی اور فریب پر مبنی سرگرمیوں کو انتظامیہ کے علم میں لاتا ہے تو فراہم کی گئی معلومات اور نتیجے میں نقصان سے بچاؤ کے اثرات کی اہمیت کے لحاظ سے اُسے مناسب انعام سے نوازا جائے گا۔ اس انعام میں نقد انعامات یا تنخواہ میں اضافہ یا ترقی شامل ہو سکتی ہے۔
  •  انعامات/ایوارڈ متعلقہ انکشاف کرنے والے کو خفیہ انداز میں یا ایسی صورت میں دیئے جائیں گے کہ کوئی بھی شخص حقیقی وجوہات سے لاعلم رہے۔

6. وہسل بلوئنگ کا غلط استعمال

تمام ملازمین سے افواہیں پھیلانے، غیر ذمہ دارانہ رویہ اپنانے اور جھوٹے الزامات لگانے سے گریز کی توقع کی جاتی ہے۔ اگر عملہ میں سے کوئی فرد نیک نیتی سے الزام لگاتا ہے اور تفتیش سے یہ ثابت نہیں ہوتا تو اُس کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی جائے گی۔ تاہم اگر عملہ کا کوئی فرد بد نیتی پر مبنی الزامات/شکایت(شکایات) لگاتا ہے یا ٹیم کے رکن/سینیئر کو انکشاف سے متعلق وہسل بلوئنگ پالیسی کا غلط استعمال کرتا ہے یا وہسل بلوئنگ پالیسی کے تحت تحفظ حاصل کرتا ہے تو باقاعدہ تفتیش کے بعد اُن کے خلاف تادیبی کارروائی عمل میں لائی جا سکتی ہے۔

7. کارپوریٹ وہسل بلوئنگ پالیسی کا نفاذ


  • 7.1 وہسل بلوئنگ کا عمل

    ACOB کی منظوری سے چیف ARR وہسل بلوئنگ طریقہ کار پر مشتمل کتابچہ میں تبدیلی کا ذمہ دار ہو گا۔


  • 7.2 رپورٹنگ

    تفتیشی رپورٹ جمع کراتے وقت سخت رازداری کو عمل میں لایا جائے گا۔ٹیم کی جانب سے تفتیشی نتائج کے ہمراہ رپورٹ چیئر مین، ACOB کو مرحلہ وار جمع کرائی جائے گی۔


  • 7.3 وہسل بلوئنگ شکایات کو محفوظ کرنا

    مذکورہ بالا ای میل ایڈریس پر ڈاک یا ABL کارپوریٹ ویب سائٹ پر دستیاب وہسل بلوئنگ فارم کے ذریعے وصول تمام وہسل بلوئنگ شکایات 3 سال تک محفوظ رکھی جائیں گی جس کے بعد شکایات کو داخل دفتر کر دیا جائے گا اور انہیں بینک ریکارڈ کو محفوظ کرنے کی پالیسی کے مطابق محفوظ کیا جائے گا۔


  • 7.4 تادیبی کارروائی

    1. تفتیش کے دوران اگر بینک کے عہدیدار کی فریب، غیر انسانی و غیر اخلاقی یابد دیانتی پر مبنی سرگرمی میں ملوث ہونا ثابت ہو جائے تو بینک کے لاگو اصول و طریقہ ہائے کار کے تحت اُس کے خلاف تادیبی کارروائی کا آغاز کیا جائے گا۔
    2. بیرونی فریقین کی صورت میں تفتیشی رپورٹ اور سفارشات کی بنیا د پر بینک متعلقہ فریق کے خلاف قانونی کارروائی پر غور کرے گا۔
    3. اگر معاملہ سنگین نوعیت کا ہوگا بینک ملزم(ملزمان) کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لانے کا فیصلہ کرسکتا ہے۔